Assignment No 2 Solution Course Code 219

سوال نمبر 1 مختلف سبزیوں کی چنائی اور ان کو منڈی میں بھیجنے کے دوران احتیاطی تدابیر پر روشنی ڈالیں۔

مختلف سبزیوں کی چنائی اور ان کو منڈی میں بھیجنے کے دوران احتیاطی تدابیر:

سبزیوں کی چنائی:

صحتمند اور زیادہ پیداوارات:

صحتمند اور زیادہ پیداوارات حاصل کرنے کیلئے مختلف قسم کی سبزیاں منتخب کریں۔

موسم کے مطابقت کے مطابق انتخابات کریں تاکہ مزیداری اور پیداوارات میں بہترین نتائج حاصل ہوں۔

مظبوط جڑیں اور پتے:

سبزیوں کی مظبوط جڑیں اور پتے چنیں تاکہ اچھی پیداوارات حاصل ہو۔

پھولے ہوئے اور صحتمند پودے کا انتخاب کریں۔

پیداوار کے دوران کمیونیکیشن:

پیداوار کے دوران اپنے باغ کے لئے مناسب چنائی کرنے کیلئے اپنے مزارعی اطراف کے ساتھ بہترین کمیونیکیشن رکھیں۔

منڈی میں بھیجنے کے دوران:

صحتمندی اور صفائی:

منڈی میں بھیجنے سے قبل، اسے صفائی اور صحتمندی کا چیک کریں۔

کھلی ہوائیں اور مصالحتی شرائط کو مد نظر رکھیں تاکہ سبزیاں بہترین حالت میں رہیں۔

قانونی اور مناسب ڈاکیومنٹیشن:

سبزیوں کو منڈی میں بھیجنے سے قبل، اپنے تمام قانونی اور مناسب ڈاکیومنٹیشن کو چیک کریں۔

قانونی معائنہ اور ٹیکنیکل ڈاکیومنٹیشن کا استعمال کریں تاکہ آپ کے مصالحے محفوظ رہیں۔

ٹرانسپورٹیشن کی اہتمامات:

منڈی تک سبزیوں کو مناسب ٹرانسپورٹیشن کے ذریعے پہنچانے کیلئے اہتمامات کریں۔

منڈی تک رسیہ، ٹریلر، یا دوسرے ٹرانسپورٹیشن وسائلے استعمال کریں۔

سمت بھرائیں اور مناسب تخزین:

سبزیوں کو منڈی میں بھیجنے سے پہلے ان کو صحیح سمت میں بھریں۔

صحتمند سبزیوں کو مناسب حرارت اور رطوبت میں رکھیں تاکہ وہ دکانوں میں زندگی بہتر گزاریں۔

مناسب تسلیم وصول:

سبزیوں کی چنائی کے دوران ہر مصرفی کو مناسب تسلیم وصول کے لئے مد نظر رکھیں۔

قیمتوں، مصرف کاروں، اور منڈی کے اصولوں کو مد نظر رکھیں۔

احتیاطی تدابیر:

منڈی میں بھیجنے کے دوران احتیاطی تدابیر اختیار کریں، جیسے کہ ہاتھوں کی صفائی اور ماسک پہننا۔

بینکہرانے، اور دوسرے صحتیابی امور کو چیک کرنا بھی ضروری ہے۔

صفائی اور بیماریوں سے بچاؤ:

منڈی میں بھیجنے سے قبل اور بعد میں اچھی صفائی برقرار رکھیں تاکہ بیماریوں کا خدشہ نہ ہو۔

اچھی صحت کے لئے اپنے اطرافی علاقوں کی اپ ٹو ڈیٹ ویکسینیشن کا خیال رکھیں۔

یہ احتیاطی تدابیر چندر ہیں جو سبزیوں کی چنائی اور منڈی میں بھیجنے کے دوران اہم ہوتی ہیں۔

سوال نمبر 2 گوداموں میں غلے کی حفاظت کی اہمیت بیان کریں۔

گوداموں میں غلے کی حفاظت کی اہمیت:

محصولات کی حفاظت:

از برداشتی پیداوارات:

گوداموں میں غلے کی بنا پر از برداشتی پیداوارات، جیسے کہ اناج، دالیں، اور چاول وغیرہ، کی حفاظت میں اہم کردار ہوتا ہے۔

پروڈکٹس کے خراب ہونے سے بچاؤ:

محصولات کو غلے کے ذریعے چھوڑنے سے ان کا نکسان کم ہوتا ہے اور خراب ہونے کا خدرہ کم ہوتا ہے۔

رطوبت اور حرارت کا انتظام:

پیداوارات کی خریداری کے بعد:

گوداموں میں غلے کے ذریعے پیداوارات کو رطوبت اور حرارت سے محفوظ رکھنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔

گوداموں کو مصرف کی مقدار کے مطابق ٹھنڈہ رکھنے کیلئے مناسب تدابیر کریں۔

پیداوارات کی درست ٹیمپریچر:

پیداوارات کی قسم کے مطابق:

گودام میں غلے کا استعمال اس وقت پر ہوتا ہے جب پیداوارات کو درست ٹیمپریچر میں رکھنا ضروری ہو۔

مختلف محصولات کے لئے مناسب درجہ حرارت کا انتخاب کریں۔

پروڈکٹس کی قیمت کی حفاظت:

قیمتی پروڈکٹس:

گوداموں میں غلے کے ذریعے قیمتی پروڈکٹس، جیسے کہ خشک میوہ، مکھن، اور چینی وغیرہ، کو حفاظت میں رکھا جاتا ہے تاکہ ان کی قیمت بڑھ سکے۔

گوداموں کی میزبانی میں درست ٹیمپریچر اور رطوبت کا خیال رکھیں۔

موسمی تبدیلیوں کا اثر کم کریں:

حفاظت کے دوران:

موسمی تبدیلیوں کے دوران، جب حرارت یا رطوبت میں تبدیلی ہوتی ہے، غلے کے ذریعے محفوظیت کا اہتمام بڑھا دیا جاتا ہے۔

ٹیمپریچر اور رطوبت کا استمراری مونیٹرنگ کریں تاکہ پیداوارات محفوظ رہیں۔

بھٹوں کا استعمال:

محصولات کی تنظیم:

غلے کا استعمال گوداموں میں مختلف محصولات کی تنظیم میں بھٹوں کی مدد کرتا ہے۔

مختلف بھٹوں کا استعمال کرکے مختلف محصولات کو مختلف ٹیمپریچر اور رطوبت میں رکھا جا سکتا ہے۔

بہترین مارکیٹنگ اور فراہمی:

پیداوارات کی مارکیٹنگ:

غلے کے ذریعے محفوظ شدہ پیداوارات کو بہترین مارکیٹ میں پیش کرنے کیلئے اچھی حالت میں رکھتا ہے۔

مارکیٹنگ اور فراہمی کے لئے اچھی قیمتوں کا حفاظتی اثر ہوتا ہے۔

سوال نمبر 3- ذخیره شده اجناس کو نقصان پہنچانے والے کیڑوں کی روک تھام کے بارے میں تحریر کریں۔

ذخیرہ شدہ اجناس کو نقصان پہنچانے والے کیڑوں کی روک تھام:

ذخیرہ شدہ اجناس یا فاسد ہونے والی محصولات کو نقصان پہنچانے والے کیڑے، جانورات اور کیڑوں کا مقابلہ کرنا ضروری ہے۔ یہ کیڑے مختلف اقسام کے ہوتے ہیں جو ذخیرہ شدہ محصولات پر حملہ آور ہوتے ہیں۔ یہاں اہم تدابیر بیان کی گئی ہیں:

آڑوں کی صفائی:

آڑوں، گوداموں اور ذخیرہ شدہ محصولات کی سچائی اور صفائی کو برقرار رکھیں۔

گوداموں میں صفائی کو بروقت دور کرنا اور برداشتی محصولات کو صحیح طریقے سے رکھنا اہم ہے۔

حشرات کنٹرول:

حشرات کو کنٹرول کرنے کیلئے مختلف اہم اجراءات انتخاب کریں۔

حشرات کنٹرول کے لئے کیڑے مارنے والی اجراءات، جیسے کہ انفیکٹنٹسٹیکائیڈز اور بھرتیل کنٹرول، استعمال کریں۔

جھلسانے والے نرم:

جھلسانے والے نرم، جیسے کہ کچھ کیڑے، کی روک تھام میں مددگار ہو سکتے ہیں۔

جھلسانے والے نرم کی اچھی طرح سے پھیلاوٹ کو روکا جا سکتا ہے۔

کیڈیوسیوس بیٹلز:

کیڈیوسیوس بیٹلز جیسے دفع ہاتھی یا کیڑے مارنے والے کیڑوں کو استعمال کریں۔

ان کو گوداموں میں رہنے والے محصولات کو خراب کرنے والے کیڑوں سے بچانے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔

تبادلہ:

گوداموں میں ذخیرہ شدہ محصولات کو وقتاً فوقتاً تبادلہ کریں۔

فروری، مارچ اور اپریل کے دوران زیادہ گرمیوں میں کیڑوں کا خیال رکھا جا سکتا ہے اور گرمیوں کی مصالحتیں محصولات پر بڑھ سکتی ہیں۔

خشکی:

محصولات کی خشکی کو بڑھانے والی شرائط کا اہتمام کریں۔

خشک محیط میں کیڑے کمزور ہوتے ہیں اور ان کی روک تھام میں مددگار ہوتی ہے۔

گھریلو ٹیکنیک:

گھریلو ٹیکنیک، جیسے کہ گھریلو اجسٹمنٹ اور سپلائی کمپنیز کی مدد سے کیڑوں کو روکنے میں مدد دیتی ہے۔

گھریلو اجسٹمنٹ کا استعمال کرکے محصولات کو چیک کرنا اور اگر آپ کوئی مشکلات محسوس کریں تو ماہرین سے رابطہ کریں۔

استوریج کی شرائط:

محصولات کو استور کرنے کے لئے مناسب شرائط فراہم کریں۔

گوداموں میں تھنڈی اور خشک محیط میں محصولات کو رکھنے کی کوشش کریں۔

کھاتا بندر مکافات:

کھاتا بندر مکافات، جیسے کہ کھاتا بندر، انسیکٹ ڈائیسٹ کا استعمال کرنے سے بھی کیڑوں کو روکا جا سکتا ہے۔

یہ مکافات بھی گودام میں محصولات کو بچانے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

یہ تدابیر ملکر محصولات کو ذخیرہ شدہ اجناس کو نقصان پہنچانے والے کیڑوں سے بچانے میں مدد فراہم کرتی ہیں۔

سوال نمبر 4 پھلوں اور سبزیوں کو خشک کرنے کے عملی طریقے بیان کریں۔

پھلوں اور سبزیوں کو خشک کرنے کے عملی طریقے:

پھلوں اور سبزیوں کو خشک کرنا ایک مضبوط اور علمی طریقہ ہے جس سے آپ ان کی مصرفی مدت بڑھا سکتے ہیں اور انہیں موسموں کے متناسب استعمال کر سکتے ہیں۔ یہاں چند عملی طریقے بیان کیے گئے ہیں:

پھلوں اور سبزیوں کا چھلکا نکالیں:

پھلوں اور سبزیوں کو خشک کرنے سے پہلے ان کا چھلکا نکالیں۔

چھلکا نکالنے سے پھل یا سبزی کا رنگ چمکدار رہتا ہے اور اس کی خشکی میں بہترین نتیجے حاصل ہوتے ہیں۔

چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹیں:

پھلوں یا سبزیوں کو چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹیں تاکہ خشک ہونے میں زیادہ وقت نہ لگے۔

چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹنا اس بات کو یقینی بناتا ہے کہ پوری مواد خوبصورتی سے خشک ہوتی ہے اور ہر ٹکڑا یکساں طور پر خشک ہوتا ہے۔

خشک کرنے کے لئے ریکٹینگ ٹرےز یا جھلسانے استعمال کریں:

پھلوں یا سبزیوں کو خشک کرنے کے لئے ریکٹینگ ٹرےز یا جھلسانے استعمال کریں۔

یہ ٹرےز یا جھلسانے خشک کرنے میں زیادہ خوبصورتی پیدا کرتے ہیں اور ہوائیں آسانی سے گزر سکتی ہیں جس سے مواد خوبصورتی سے خشک ہوتا ہے۔

مناسب خشکی کی شرائط:

خشک کرنے کے لئے مناسب خشکی کی شرائط میں رکھیں۔

خشکی کی شرائط میں درجہ حرارت اور رطوبت کو مد نظر رکھیں تاکہ مواد جلد خشک ہو جائے۔

خشکی کے لئے وقت:

خشک کرنے کے لئے مواد کو وقت دیں۔

مواد کی نوعیت اور حجم کے مطابق وقت کو مد نظر رکھیں تاکہ خشکی مکمل اور بہترین حالت میں ہو۔

ہوائی گاڑیوں یا خوراک خشک کرنے کا استعمال:

ہوائی گاڑیوں یا خوراک خشک کرنے کا استعمال کریں۔

یہ ترکیب زیادہ تر درجہ حرارت میں اور زیادہ سرعت سے خشکی ممکن بناتی ہے۔

خشک ہونے کے بعد مناسب اندراج کریں:

خشک ہونے کے بعد، پھلوں یا سبزیوں کو مناسب اندراج میں رکھیں۔

خشک مواد کو کھانے کے لئے استعمال کرنے سے پہلے اچھی طرح سے چھبالیں تاکہ ان کی نمائش بہتر ہو۔

مواد کو ٹائٹلی بند کریں:

خشک ہونے کے بعد، مواد کو ٹائٹلی بند کریں تاکہ ہوائیں ان تک نہ پہنچ سکیں اور مواد لمبے عرصے تک تازہ رہے۔

خشک مواد کو ہوم میں استعمال کریں:

خشک ہونے والے پھلوں اور سبزیوں کو ہوم میں استعمال کریں تاکہ آپ ان کی مصرفی مدت بڑھا سکیں اور انہیں موسم کے متناسب استعمال کریں۔

یہ عملی طریقے انتخابی طور پر ہیں اور مختلف پھلوں اور سبزیوں کی خصوصیات پر منحصر ہوتے ہیں۔

سوال نمبر 5 نوٹ تحریر کریں۔ 1- سبزیوں کا ملا جلا اچار 2- آلو بخارے کی چٹنی

نوٹ تحریر:

1- سبزیوں کا ملا جلا اچار:

سبزیوں کا ملا جلا اچار بنانا ایک لذیذ اور صحت بخش انٹری ہے جو گرمائیوں میں خصوصی طور پر مزیدار ہوتی ہے۔ یہ اچار مختلف سبزیوں کو ملا کر بنایا جاتا ہے، جو ہمیشہ موجود ہوتی ہیں۔

ترکیب:

سبزیاں: ٹماٹر، کھیرا، گاجر، شملہ مرچ، پیاز

مصالحے: سرکہ، نمک، کالی مرچ، زیرہ

تدابیر:

سبزیوں کو صاف کریں اور چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹیں۔

ایک بڑے بول میں سبزیاں ڈالیں اور اچھی طرح ملا لیں۔

اب اس میں سرکہ، نمک، کالی مرچ اور زیرہ ڈالیں اور دوبارہ ملا لیں۔

مکمل ہونے پر اچار کو جار میں ڈال کر چھپ لیں۔

تین دن بعد اچار تیار ہوتا ہے اور اسے پکانے کیلئے تیار ہے۔

2- آلو بخارے کی چٹنی:

آلو بخارے کی چٹنی یکساں ہر موسم میں بنائی جاتی ہے اور یہ نہایت سادہ اور مزیدار ہوتی ہے۔ یہ چٹنی نہایت ہلکی ہوتی ہے اور مختلف نوعیت کے ناشتے اور خوراکوں کے ساتھ میل کھاتی ہے۔

ترکیب:

سامان: آلو بخارے، پودینہ، زیرہ، کالی مرچ، نمک

تدابیر:

آلو بخارے کو چھلکے کے ساتھ اُبال کر کچھ چھوٹے ٹکڑوں میں کاٹ لیں۔

اب اسے مکمل طور پر مسلسل کریں تاکہ چٹنی کا ہموار مسلسل ٹیکسچر بنے۔

اس میں پودینہ، زیرہ، کالی مرچ اور نمک ڈالیں اور پھر دوبارہ مسلسل کریں۔

چٹنی تیار ہے، جو سرد یا گرما ہو کر کھائی جا سکتی ہے۔

یہ چٹنی ایک بڑی تنوع اور زیادہ مقدار میں بنائی جا سکتی ہے اور ہر طرح کے ناشتوں کے ساتھ خوراک ہو سکتی ہے۔

Here is some other assignments solution….

Assignment No 1 Solution Course Code 220

Assignment No 1 Solution Course Code 313

Assignment No 1 Solution Course Code 219

Assignment No 1 Solution Course Code 217

Assignment No 2 Solution Course Code 217

Similar Posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *